Engineer Mirza Ali

Hazrat-e-MOAVIAH رضي اللہ عنہ in the sight of Orya Maqbool Jan Sb. ??? (Engineer Muhammad Ali Mirza)

Hazrat-e-MOAVIAH رضي اللہ عنہ in the sight of Orya Maqbool Jan Sb. ??? (Engineer Muhammad Ali Mirza)

Today topic is :Hazrat-e-MOAVIAH رضي اللہ عنہ in the sight of Orya Maqbool Jan Sb. ??? (Engineer Muhammad Ali Mirza).

Video Information
Title Hazrat-e-MOAVIAH رضي اللہ عنہ in the sight of Orya Maqbool Jan Sb. ??? (Engineer Muhammad Ali Mirza)
Video Id yEo0OtnYUOM
Video Source https://www.youtube.com/watch?v=yEo0OtnYUOM
Video Image 1677896961 767 hqdefault
Video Views 177274
Video Published 2019-09-15 20:40:35
Video Rating 5.00
Video Duration 00:28:43
Video Author Engineer Muhammad Ali Mirza – Official Channel
Video Likes 4029
Video Dislikes
Video Tags #HazrateMOAVIAH #رضي #اللہ #عنہ #sight #Orya #Maqbool #Jan #Engineer #Muhammad #Ali #Mirza
Download Click here

Engineer Muhammad Mirza Ali


Mirza Ali

Muhammad Ali Mirza was born on 4 October 1977 in Jhelum, a city in Punjab, Pakistan. He is a 19th grade mechanical engineer in a government department.

Muhammad Ali Mirza, commonly known as Engineer Muhammad Ali Mirza is a Pakistani Islamic scholar and commentator.

Is engineer Muhammad Ali Mirza Sunni or Shia?

engineer mirza ali

Engineer Muahmmad Ali Mirza is Sunni, Known "Mulim ilmi kitabi".

How do I contact engineer Muhammad Ali?

Engineer Muhammad Ali Mirza

You can call on this phone number, which is "03215900162", and discuss your problem with them.

Who is Mirza Ali of Pakistan?

muhammad mirza ali

Muhammad Ali Mirza, commonly known as Engineer Muhammad Ali Mirza is a Pakistani Islamic scholar and commentator.

What is the age of engineer Muhammad Ali Mirza?

mirza ali

(Engineer Muhammad Ali Mirza) Born: October 4, 1977 (age 46 years) Place: Jhelum Country: Pakistan

What is religion of Engineer Muhammad Ali Mirza?

Engineer Muhammad Ali Mirza is Muslim by religion. He is also known as muslim ilmi kitabi. He says " I,m Muslim Ilmi Kitabi".

What is the Education of Engineer Muhammad Ali Mirza?

He is an engineer by profession. And also a "Pakistani Islamic Scholar". He studied in "University of Engineering and Technology, Taxila".

Engineer Muhammad Ali Mirza

Muhammad Ali Mirza, commonly known as Engineer Muhammad Ali Mirza is a Pakistani Islamic scholar and commentator. Engineer Muhammad Ali Mirza is an acclaimed Islamic scholar whose passion for learning and understanding the Quran and Hadith has earned him a distinguished place in the Muslim world.

33 Comments

  1. Ref. No. 1 : 40-Questions with Maulana ISHAQ Madani رحمہ اللہ (By Engineer Muhammad Ali Mirza on 23-March-2012) : https://www.youtube.com/watch?v=DgyaAKMsDBk&t=169s
    Ref. No. 2 : Reply to Maulana ILYAS Qadri Sb. on Hazrat-e-MOAVIAH رضی اللہ عنہ (By Engineer Muhammad Ali Mirza) : https://www.youtube.com/watch?v=RiimByZIksk&t=49s
    Ref. No. 3 : Hazrat-e-MOAVIAH r.a Ummat kay MAMON ??? Faza'il-e-MOAVIAH r.a ??? (By Engineer Muhammad Ali Mirza) :
    https://www.youtube.com/watch?v=ui4afKuWK3w&t=1298s
    Ref. No. 4 : Dr. Israr r.a Vs Javaid Ghamidi on DEMOCRACY & Iqamat-e-DEEN ??? (By Engineer Muhammad Ali Mirza) :

    https://www.youtube.com/watch?v=Ni47y9uJgaA&t=3s
    Ref. No. 5 : Dictatorship in ISLAM ??? Islamic Democracy & KHELAFAT Vs MALOOKIYAT ??? (Engr. Muhammad Ali Mirza) :
    https://www.youtube.com/watch?v=Zf9KhduMmG0&t=82s

  2. الیاس خان ۔۔،،،،،،،۔۔
    غیر اللہ کو دعاؤں میں پکارنے والے مسلمان بھائی ہوشیار ہو جائیں اور اپنی آخرت بچائیں
    غیر اللہ سے دعا مانگنے کا اللہُ تعالیٰ اور رسول پاک نے منع فرمایا ہے

    یہ مشرک مولوی اور پیر غیر اللہ کو دعاؤں میں پکارنے کی تعلیم کرنے والے آپکو اللہ تعالیٰ کا ارشاد پاک نہیں بتائیں گے
    بلکہ بہانے بہانے سے اللہ کا حکم آپسے چھپائیں گے
    کبھی آیات کے ایک آدھ لفظ کا ترجمہ اوپر نیچے کرکے غلط مطلب بتائیں گے
    غیر اللہ کو دعاؤں میں پکارنے کا شرک خود کریں گے اور شرک کے خلاف آیات بتوں پر فٹ کریں گے؟
    کبھی قرآن ترجمہ سے پڑھنے سے منع کریں گے کہ قرآن ترجمہ سے پڑھنے سے گمراہ ہو جاؤ گے؟
    اللہ تعالیٰ نے ارشاد فرمایا
    میں نے سمجھنے کے لئے قرآن کو آسان کر دیا ہے القرآن

    مشرکوں کی یہ سب شیطانی چال ہیں جو شیطان ملعون کے قابو آئے مشرکوں کے زریعے مارکیٹ میں موجود ہیں

    دعا کے لئےجان لیجئے
    دعا عبادت کا مغز ہے یعنی اصل عبادت
    جس نے غیر اللہ کو دعا میں پکارا اسنے اپنی آخرت خراب کی؟

    اللہ تعالیٰ کی اتاری ہوئی شریعت کے مطابق عبادت بھی اللہ تعالیٰ کی ہوگی دعا بھی اللہ تعالیٰ سے مانگی جائے گی کیونکہ دعا عبادت ہے
    رسول اللہ نے فرمایا دعا ہی تو عبادت ہے حدیث ترمزی ابو داؤد سنن نسائی

    اللہ تعالیٰ کا فائینل حکم جو سورہ فاتحہ میں موجود ہے
    اے اللہ ہم تیری ہی عبادت کرتے ہیں
    اور تجھ ہی سے مدد مانگتے ہیں القرآن

    اللہ تعالیٰ نے اہل ایمان مسلمانوں کی نشانی قرآن مجید میں بیان فرمائی ہے
    اللہ تعالیٰ نے ارشاد فرمایا
    اللہ کے ساتھ وہ لوگ کسی اور الہ کو دعا کے لئے نہیں پکارتے یہ انکی نشانی ہے القرآن سورہ بنی اسرائیل آیت 23

    سورہ الحجر آیت 49 50 میں اللہ تعالیٰ نے ارشاد فرمایا
    اے نبی میرے بندوں کو بتا دو کہ میں بڑا بخشنے والا ہوں بڑا مہربان ہوں اور یہ کہ میرا عزاب بھی درد دینے والا ہے القرآن

    لوگوں آخرت کی فکر کرو اگر شرک پر موت آگئی تو درد ناک عزاب مقدر بن جائے گا

    اللہ تعالیٰ نے قرآن مجید سورہ مائدہ آیت 72 میں ارشاد فرمایا
    میں مشرکوں پر جنت حرام کردونگا مشرکوں کا ٹھکانہ ہمیشہ کے لئے جہنم ہے القرآن

    ایک جگہ قرآن مجید میں اللہ تعالیٰ نے ارشاد فرمایا
    اور جب یہ میرے پاس آئیں گے میں ان سے انتقام لوں گا القران

    اللہ تعالیٰ نے قرآن مجید سورہ البقرہ آیت 186 میں ارشاد فرمایا

    وَإِذَا سَأَلَكَ عِبَادِي عَنِّي فَإِنِّي قَرِيبٌ ۖ أُجِيبُ دَعْوَةَ الدَّاعِ إِذَا دَعَانِ ۖ فَلْيَسْتَجِيبُوا لِي وَلْيُؤْمِنُوا بِي لَعَلَّهُمْ يَرْشُدُونَ ۞ القرآن سورۃ البقرہ آیت 186
    ترجمہ
    اے نبی جب میرے بندے میرے بارے میں آپ سے سوال کریں تو آپ کہ دیجئے کہ میں بہت قریب ہوں (شہ رگ سے قریب) ہر پکارنے والے کی پکار کو سنتا ہوں اور قبول کرتا ہوں آپ بھی ان سے کہ دیجئے سیدھی راہ اختیار کرین القرآن

    اللہ تعالیٰ نے مشرک مسلمانوں کو مسجدیں آباد کرنے سے روک دیا ہے
    کیونکہ مسجدیں کافر نہیں مسلمان آباد کرتے ہیں جنھیں انکے شرک کی وجہ سے اللہ تعالیٰ نے مسجدیں آباد کرنے سے روک دیا ہے
    سورہ توبہ میں اللہ تعالیٰ کا حکم جان لیجئے
    👇
    سورہ التوبة آیت 17
    بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ
    مَا كَانَ لِلۡمُشۡرِكِيۡنَ اَنۡ يَّعۡمُرُوۡا مَسٰجِدَ اللّٰهِ شٰهِدِيۡنَ عَلٰٓى اَنۡفُسِهِمۡ بِالـكُفۡرِ‌ؕ اُولٰۤئِكَ حَبِطَتۡ اَعۡمَالُهُمۡ ۖۚ وَ فِى النَّارِ هُمۡ خٰلِدُوۡنَ ۞
    ترجمہ
    مشرکوں کا یہ کام نہیں کہ وہ اللہ کی مسجدوں کو آباد کریں وہ تو خود اپنے آپ پر کفر کی شہادت دے رہے ہیں یہی لوگ ہیں جن کے سب اعمال ضائع ہوگئے اور وہ ہمیشہ دوزخ میں رہیں گے القرآن
    اور سورہ توبہ ہی میں اللہ تعالیٰ نے مشرکوں کو ناپاک قرار دیا ہے القرآن

    اللہ تعالیٰ نے ارشاد فرمایا
    تم میں بہت لوگ باوجود اللہ پر ایمان لانے کے مشرک ہیں القرآن سورہ یوسف آیت 106
    اللہ تعالیٰ نے سورہ یوسف میں بتا دیا ہے مسلمانوں میں مشرک گھسے ہوئے ہیں
    یہ وہی غیر اللہ کو پکارنے والے مشرک ہیں جن کی وجہ سے اللہ ناراض ہے اور طرح طرح کی مصیبتیں نازل ہو رہیں ہیں؟

    اللہ تعالیٰ نے غیر اللہ کو دعاؤں میں اپنی تکلیف فریاد ہیش کرنے والوں کے لئے سورہ نمل آیت 62 میں ارشاد فرمایا
    بھلا بتاؤ کون ہے دوسرا جو مصیبت اور پریشانی میں گھرے ہوئے شخص کی فریاد اور دعاؤں کو سنتا ہے
    (بیشک دعاؤں کو اللہ سنتا ہے)
    اور اس سے اسکی مصیبت اور تکلیف کو دور کر دیتا ہے اور تمھیں زمین پر خلیفہ بناتا ہے
    کیا اللہ کے ساتھ اور آلہ معبود بھی ہے جو تمھاری تکلیف کو سنے اور تمھاری تکلیف کو دور کردے
    لیکن نصیحت بہت کم لوگ حاصل کرتے ہیں القرآن
    کیا اللہ کے ساتھ اور آلہ معبود بھی ہیں جو تمھاری تکلیف کو سنے اور تمھاری تکلیف کو دور کردے
    جنکو مشرک دعاؤں میں پکارتے ہیں اور انھیں اپنی تکلیف پریشانی پیش کرتے ہیں وہ الہ معبود ہی تو ہیں؟
    جسکا قرآن مجید سورہ نمل اور سورہ بنی اسرائیل میں اللہ تعالیٰ نے ارشاد فرما دیا ہے
    سورہ بنی اسرائیل آیت 55 56
    کہ دیجئے اللہ کے سوا جنھیں تم معبود سمجھ کر پکار رہے ہو نہ تو وہ تم سے کسی تکلیف کو دور کر سکتے ہیں اور نہ ہی بدل سکتے ہیں اور جن کو تم مدد کے لئے پکارتے ہو وہ تو خود اپنے رب کو پکارتے ہیں اور اپنے رب کی رحمت کے طلب گار رہتے ہیں اور اللہ کے عزاب سے ڈرتے رہتے ہیں القرآن

    سورہ نحل آیت 20 ،21
    وَ الَّذِیۡنَ یَدۡعُوۡنَ مِنۡ دُوۡنِ اللّٰہِ لَا یَخۡلُقُوۡنَ شَیۡئًا وَّ ہُمۡ یُخۡلَقُوۡنَ آیت ۲۰
    اَمۡوَاتٌ غَیۡرُ اَحۡیَآءٍ ۚ وَ مَا یَشۡعُرُوۡنَ ۙ اَیَّانَ یُبۡعَثُوۡنَ آیت ۲۱
    ترجمہ
    اور جن جن کو یہ لوگ اللہ تعالٰی کے سوا پکارتے ہیں وہ کسی چیز کو پیدا نہیں کر سکتے بلکہ خود پیدا کیئے گئے ہیں
    مردہ ہیں زندہ نہیں انہیں تو یہ بھی شعور نہیں ک کب اٹھائے جائیں گے القرآن
    قیامت کے دن جب سب کو قبروں سے اٹھایا جائے گا اس کا بھی شعور نہیں رکھتے

    حدیث کے نام پر غلط روایت پیش کرنے والوں اللہ سے ڈرو
    منگھڑت 👇 جعلی روایت

    حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کے زمانے میں قحط پڑا ایک شخص نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی قبر مبارک پر حاضر ہوا اور رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے بارش کی دعا کرنے کی درخواست کی پھر اس شخص کو نیند آگئی ( روضہ رسول پر نیند کا آنا حیرت کا مقام ہے اور جھوٹ کی دلیل ہے )
    رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اس شخص کے خواب میں آئے اور حضرت عمر رضی اللہ عنہ کے لئے سلام کہا اور پیغام دیا
    یہ روایت ☝️ منگھڑت اور جعلی ہے

    اصل روایت صحیح بخاری میں 1010 نمبر حدیث ہے
    صحیح بخاری
    حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ دعا فرماتے ہیں
    اے اللہ پہلے پہل ہم تیرے نبی کے وسیلے سے تیری طرف متوجہ ہوتے تھے اور تو بارش برسا دیا کرتا تھا اب ہم تیرے نبی کے چچا کو لیکر آئیں ہیں انکی دعا کی برکت سے بارش نازل فرما ۔,,,,.

  3. تمہارے بیگراونڈ میں اذان شروع ہیں او تم اپنی باتیں بند نہیں کرسکتے۔ اذان کی احترام کریں

  4. I hv a question kia kbi ksi sahe Allah walay ne b en firqoun ma se ksi ko chuna ho js se ap k mulakat hue ho r apne kaha ho k ye Arifeen billah ma se hain??Aj kal k babay nae asal deen pe chalanay walay k baat kr rha hun…Jazak Allah

  5. Ali bhai aapne jo panda uthaya hai ummet e muslima ke na elm Baha'iku maloom nhi thaa, woh parda utha diya hai, ab olma e haq jo hai ya tho haq bayan karenge, ya apna bistar leke Saudi arab bhagege..
    Aap haq bayan karte raho ali bhai..
    Allah pak aapku apni hifazat ME rakhe…
    Koi apse nhi takraayega ab ,
    Aapke background me nabi pak sww aur Allah hai….

  6. Zulm ki Maut hai Jeena Hussain ka , Mushq se behtar hai paseena Husaain ka ,, Dafan ho jayegi Nasbiyt Jhan me , Shaan se Lehrayega Parcham Husaain ka ,,

  7. Aap puri duniya ke muslmaan mavya ke mugfrut ke dua kur lo bekar hay usko koe nahi bucha sukta Islam ko bhut buda nuksaan is insaan nay diya firkawariyat ka khail is nay diya firkawariyat ke gundgi say muslmaano ko bhut nuksan hua

  8. عبدالرحمن بن عبد رب الکعبہ سے روایت ہے میں مسجد میں گیا وہاں عبداﷲ بن عمرو بن العاصؓ کعبہ کے سایہ میں بیٹھے تھے اور لوگ ان کے پاس جمع تھے میں بھی گیا اور بیٹھا ۔ انہوں نے کہا ہم رسول اﷲ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے ساتھ تھے ایک سفر میں تو ایک جگہ اترے ، کوئی اپنا ڈیرہ درست کرنے لگا ، کوئی تیر مارنے لگا ، کوئی اپنے جانوروں میں تھا کہ اتنے میں رسول اﷲ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے پکارنے والے نے آواز دی نماز کے لیے اکٹھا ہوجاؤ ۔ ہم سب آپ کے پاس جمع ہوئے ۔ اپ نے فرمایا مجھ سے پہلے کوئی نبی ایسا نہیں گزرا جس پر ضروری نہ ہو اپنی امت کو جو بہتر بات اس کو معلوم ہو بتانا اور جو بری بات ہو اس سے ڈرانا اور تمہاری یہ امت اس کے پہلے حصہ میں سلامتی ہے اور اخیر حصے میں بلا ہے اور وہ باتیں ہیں جو تم کو بری لگیں گی اور ایسے فتنے آویں گے کہ ایک فتنہ دوسرے کو ہلکا اور پتلا کردے گا ( یعنی بعد کا فتنہ پہلے سے ایسا بڑھ کر ہوگا کہ پہلا فتنہ اس کے سامنے کچھ حقیقت نہ رکھے گا ) او رایک فتنہ آوے گا تو مومن کہے گا اس میں میری تباہی ہے پھر وہ جاتا رہے گا اور دوسرا آوے گا مومن کہے گا اس میں میری تباہی ہے ۔ پھر جو کوئی چاہے کہ جہنم سے بچے او رجنت میں جاوے اس کو چاہیے کہ مرے اﷲ تعالیٰ اور پچھلے دن پر یقین رکھ کر اور لوگوں سے وہ سلوک کرے جیسا وہ چاہتا ہو کہ لوگ اس سے کریں ۔ اور جو شخص کسی امام سے بیعت کرے اور اس کو اپنا ہاتھ دے دیوے اور دل سے نیت کرے اس کی تابعداری کی تو اس کی طاعت کرے اگر طاقت ہو ۔ اب اگر دوسرا امام اس سے لڑنے کو آوے تو ( اس کو منع کرو اگر نہ مانے بغیر لڑائی کے تو ) اس کی گردن مارو ۔ یہ سن کر میں عبداﷲ کے پاس گیا اور ان سے کہا میں تم کو قسم دیتا ہوں اﷲ کی تم نے یہ رسول اﷲ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے سنا ہے؟ انہوں نے اپنے کانوں اور دل کی طرف اشارہ کیا ہاتھ سے اور کہا میرے کانوں نے سنا اور دل نے یاد رکھا ۔ میں نے کہا تمہارے چچا کے بیٹے معاویہؓ ہم کو حکم کرتے ہیں ایک دوسرے کا مال ناحق کھانے کے لیے اوراپنی جانوں کو تباہ کرنے کے لیے اور اﷲتعالیٰ فرماتا ہے ”اے ایمان والو اپنے اموال کو ناجائز طریقے سے نہ کھاؤ سوائے اس کے کہ ایسی تجارت ہو جو باہمی رضا مندی سے کی جائے اور نہ اپنی جانوں کو قتل کرو بیشک اللہ تم پر رحم فرمانے والا ہے۔“ یہ سن کر عبداﷲ بن عمرو بن العاصؓ تھوڑی دیر تک چپ رہے پھر کہا معاویہؓ کی اطاعت کرو اس کام میں جو اﷲ کے حکم کے موافق ہو اور جو کام اﷲ تعالیٰ کے حکم کے خلاف ہو اس میں معاویہؓ کا کہنا نہ مانو ۔

  9. Aap Allah ko hazir w nazir jan ker apny channel per qasam kha ker bolein k ,jin kitabon perhty hn ,ulma e kiraam perhtay nahee balky on k pass perhi rehte hn.

  10. Ali Bhai AGR muaviau ny na haq qatal b krvae aur ap ny bola k ap Banu ummaia ko jaiz baab samjhty hu rafziyat ka to phir b r.a khtu hu usko.iski thri wazahat krdyn mhrbani frma kr.

  11. وارثانِ قُرآن بہ نفسِ قُرآن

          قُرآن میراث ہے اور اللہ نے اِس کے وَارث مصطفے بندوں کو بنایا (سورة فاطرآیت-32)–  کیونکہ  وارث  ہمیشہ  میراث سے  اَفضل  ہوتا ہے اِسی لیئے اگر وَارث پر مصیبت آجائے تو جان  بچانے کے لیئے پنی میراث (یعنی جائداد، مال و دولت) کو صرف کر دیتا ہے–  اِسی افضلیت کے تناظر میں جہاں قُرآن اَلعِلم ہے (سورة آل ِ عِمراَن آیت-61)، وہاں وارثانٍ قُرآن بابُل عِلم، رَّاسِخُونَ فِي الْعِلْمِ اور أُوتُوا الْعِلْمَ (جنہیں عِلم سے نوازا گیا) ہیں– قُرآن کا حقیقی مفہوم اللہ کے علاواہ عِلم میں راسخ ہستیاں جانتی ہیں (سورة آل ِ عِمراَن آیت-7)–  ”۔ ۔ ۔ اگر تم نہیں جانتے تو اہلِ ذکر سے پوچھو‟ (سورة النّحل آیت-43)– قُرآن ذکر ہے (سورة الحِجر آیت-9) اور وارث اہلِ ذکر– ”اگر کوئی قُرآن ہوتا جس کے وسیلے پہاڑ چلاے جاتے یا  زمین کے فاصلے طے کیئےجاتے یا  مرُدوں  سے  کلام کیا جا سکتا  تو  یہ قُرآن ہے ۔ ۔ ۔‘‘ (سورة الرّعد آیت-31)–  قُرآن  کی اصل جگہ  أُوتُوا الْعِلْمَ کے سینے ہیں (سورة انکبوت آیت-49)، یعنی أُوتُوا الْعِلْمَ قُرآنی اوصاف کے مظہر  ہیں– ”أُوتُوا الْعِلْمَ کے دَرجات ہم بہت زیادہ بلند کر دیں گے‟ (سورة مُجادلہ آیت-11)– قُرآن واضع نورِ ہدایت ہے (سورة النِّسَاء آیت-174) اور وارث مجسمِ نورِ ہدایت–  قُرآن مُهَيۡمن (اَمین،  غالب، حّاکم، محّافظ، نگہبان) ہے (سورة المَائدة آیت-48)، اور وارث اَمین، محّافظ، نگہبان اور اّلا کلُ  ِغالب ہیں– قُرآن بے عیب ہے یعنی اِس  ہیں کوئی کجی نہیں (سورة الزُّمر آیت-28)، اور وارث ہرعیب سے پاک– قُرآن معصوم ہے یعنی باطل  کا اِس کے پاس گزر ناممکن ہے (سورة فصِلَت  آیت-42)،  اور وارث بھی معصوم ہستیاں  ہیں–  بہ کتاب بصیرت،  حُجت، عقل  اور فکر ہے (سورة الأعرَاف آیت-52)، اور وارث صاحبِ بصیرت اور حُتّ  اللہ ہیں– قُرآن وَاضح بیان اورمُسلمانوں کے لیۓ ہدایت، خوشخبری اور رحمت ہے (سورة النّحل آیت-89)، اور وارث نورِ ہدایت اور رحمت ہیں–  قُرآن حکمت سے سرشار ہے (سورة یٰس آیت-2)، اور وارث حِکمت کی معراج– یہ کتاب برحق ہے  یعنی  اِس میں  سچ کے سوا  کچھ نہیں (سورة فَاطر آیت-31)، اور وارث اہلٍ حق کیونکہ 9 ہجری  میں جب نجران کے عیسَایوں سے حضرت عیسیٰ عَلَیْہ السَّلَام  کی ولدیت کے مسعلے پر  اتفاق نہ ہوسکا تو اللہ کے حکم پر حضور نے انھیں مباہلے کی دعوت دی  (سورة آل ِ عِمراَن آیت-61)، اور اِس دعوتِ عام  میں جو  کہ جنگِ صداقت تھی  آپ  صرف صدیق  ہستیوں (مولا علی،  امام حسن و حسُین عَلَیْہ السَّلَام اور حضرت فاطمہ سلام اللہ  علیہا) کو  ساتھ لے کر مباہلے کے لیئےتشریف لائے؛  لیکن عیسَایوں کے بڑے  پادری عبدل مسیح  نے مباہلہ کرنے سے  انکار کر دیا  اور جزیہ  دینا  قبول کیا– اِس  واقعہِ مباہلے کو اللہ نے قصہِ حق  کہا (سورة آل ِ عِمراَن آیت-62)–  قُرآن عظیم ہے  یعنی بلند  رتبے  والا (سورة  الحِجر آیت-87)،  اور  وارث  نباءعظیم ‏‏(عظیم خبر: غدیر خم میں  اعلانِ  ولایت مولا علی عَلَیْہ السَّلَام)–  قُرآن مبین  ہے یعنی درخشاں  اور مبالغے سے پاک  کلام (سورة یٰس آیت-69)، اور وارث اِمام  ِمبین (سورة یٰس آیت-12)– یہ کتاب بے مثل  ہبے  یعنی  تمام  جن و اِنس مل کر قُرآنی سورتوں کی مثل ایک سوره بهی نہیں لا سکتے (سورة یُونس آیت-38)، اور وارث بے مثلِ–  قُرآن  مجید  ہے  یعنی جلیل اُلقدر (سورة ق آیت-1)، اور وارث پیکرِ اقدار  ٍآعلیٰ– قُرآن تبیان ہے یعنی اَپنی بات منواتا ہے (سورة النّحل آیت-89)، اور وارث ہر محاز پر غالب رہنے والے– قُرآن فرقان ہے  یعنی حق اور باطل میں فیصلا کرنے والا (سورة الفُرقان آیت-1)، اور وارث حق اور باطل کو عیاں کرنے والے– وقعہ کربلا کے بعد سرِ مبارک  اِمام حسین عَلَیْہ السَّلَام کا  نوکٍ  نیزہ  پر قُرآن کی تلاوت کرنا  اِس  اَمر کی روشن  دلیل ہے–  قُرآن کریم  ہے یعنی بڑے رتبے  والا (سورة  الواقِعَة  آیت-77)،  اور وارث مرتبے  کی معراج–  قُرآن اہِلِ اِیمان کے لیئے شّفا (پیاس بجهانا) یعنی حاجت روا ہے (سورة فُصِلَت آیت-44)،  اور وارث  مالکِ  شّفا– قُرآن  کا  مکمل سمھجنا مشکل ہے (سورة  آل ِ عِمراَن  آیت-7)، اور وارث مشکل کشا  ہیں– قُرآن  طاہر ہے  نیز اِس  کی معنویت  کی گہرائی  تک نہیں پہنچ سکتا مگر  طاہر (سورة  واقعہ  آیت-79)،  اور طہارت کے زُمرے میں  اہلِ بیت  کا  مقام بلند  ترین  ہے کیونکہ  بی بی فاطمہ سلام اللہ  علیہا، مولا علی، اِمام حسن  اور حسُین عَلَیْہ السَّلَام حضور  کے ساتھ چادر کے اندر موجود تھے جب ارشاد ہوا: ”۔ ۔ ۔ اللہ نے یہ  ارادہ  کر لیا  کہ صرف اور صرف  اے  اہلِ بیت تمھیں  ہر نجاست سے  دور  رکھے  اور اِس طرح پاک رکھے جو  پاکیزگی کا حق ہے‟ (سورة الأحزاب آیت-33)–

        قُرآن اَمر ہے (سورة الطّلاَق آیت-5)، اور وارث اُولِی الْأمر–  ”اے ایمان والو! اِطاعت کرو اللہ، رسول اور اُولِی الْأمر  کی ۔ ۔ ۔‟ (سورة النِّسَاء آیت-59)، یعنی اُولِی الْأمر ہستیوں کی  اِطاعت  اِسی طرح  واجب ہے جس طرح اللہ اور رسول کی– بہ نفس قُرآن نہیں ہو سکتا اُولِی الْأمر مگر عِلم میں  رَاسخ اور معصوم (حوالہ: مضمون اِطاعت بہ نفسِ قُرآن)– حضور نے فرمایا، ”میں تمھارے  درمیان دو گراں قدر چیزیں چھوڑے جا  رہا  ہوں  ایک قُرآن  اور دوسری میری عِطرت (اہلِ بیت)، یہ دونوں ایک  دوسرے سے جدا نہ ہوں گے یہاں تک کہ قیامت میں حوض کوثر پر مجھ سے نہ  آن ملیں،  جوشخص  اِن  دونوں سے تمسّک رکھے  گا  وہ  یقیناً  نجات  یافتا  ہے  اور جس  نے دوری  اختیار کی  وہ  یقیناً ہلاک ہو جائے گا، جب  تک  ان  دونوں سے تمسّک رکھو گے  ہرگز گمراہ  نہ ہو گے‟  اور یہ کہ، ”میرے  بارہ  خلیفہ ہوں گے جن  سب  کا  تعلق قبیلہ قریش سے ہو گا اور اِن میں آخری مُحَمَّد المھدی ہو گا‟ (صحاح ستہ)–  ”اے  ایمان  والو! ﷲ سے ڈرتے  رہو  اور اہلِ  صدق (کی معیّت) میں شامل رہو‟ (سورة توبہ آیت-119)–  کیا وہ اِس کے سوا اور کسی بات کے منتظر ہیں کہ اُن کے پاس فرشتے  آئیں یا خود تمہارا  پروردگار آئے یا تمہارے  پروردگار  کی کچھ نشانیاں آئیں (مگر) جس روز تمہارے پروردگار کی کچھ نشانیاں آئیں گی تو  جو نفس  پہلے  ایمان نہیں  لایا ہوگا یا  اُس نے  ایمان  لانے کے بعد کوئی بھلائی نہیں کی اُس کے ایمان  کا  کوئی فائدہ  نہ ہوگا،  (پیغمبر اُن سے) کہہ دو کہ تم بھی  انتظار کرو ہم بھی  انتظار کرتے ہیں‟ (سورة  الأنعَام  آیت-158)–  حضور نے فرمایا،” میرے بارویں خلیفہ کا  جب ظہور ہوگا تو آسمان سے عیسَیٰ (وارثِ انجیل) آئیں گے اور نماز پڑھیں گے مُحَمَّد المھدی (وارثٍ قُرآن) کے  پیچھے‟ (صحاح ستہ)–

  12. مجھے تو لگتا ھے ھے کہ انجنیئر محمد علی مرزا کی شکل میں اللہ رب العزت نے سید ابو الاعلی مودوی کا متبادل بھیج دیا ھے۔ اور یہ اللہ رب العزت کا امت مسلمہ پر ایک بڑا احسان ھے

Back to top button